جنوبی کوریا کا شمالی کورین غباروں کا جواب لاؤڈ اسپیکر نشریات سے دینے کا فیصلہ

جنوبی کوریا نے شمالی کوریا کے کچرے کے غباروں کا جواب لاؤڈ اسپیکر نشریات سے دینے کا فیصلہ کرلیا۔

جنوبی کوریا کا شمالی کورین غباروں کا جواب لاؤڈ اسپیکر نشریات سے دینے کا فیصلہ
جنوبی کوریا نے شمالی کوریا کے کچرے کے غباروں کا جواب لاؤڈ اسپیکر نشریات سے دینے کا فیصلہ کرلیا۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق شمالی کوریا کی جانب سے جنوبی کوریا میں کچرے سے بھرے غبارے بھیجنے کا سلسلہ جاری ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق جنوبی کوریا کے دارالحکومت سیئول اور سرحدی علاقوں میں پہلے دن اورپھر رات بھر کچرے سے بھرے غبارے دیکھے گئے۔

ان غباروں سے تنگ آکر جنوبی کوریا کی قومی سلامتی کونسل نے جوابی کارروائی کا فیصلہ کیا ہے۔
قومی سلامتی کونسل کا کہنا ہے کہ 9 جون کو شمالی کوریا کی طرف لائوڈ اسپیکر سے نشریات شروع کی جائے گی اور یہ اقدام شمالی کوریا کے صدر کم جونگ اور ان کی حکومت کے لیے “ناقابل برداشت” ہو گا۔

کونسل نے مزید کہا کہ ہم جو اقدامات کریں گے وہ شمالی کورین حکومت کے لیے تو ناقابل برداشت ہو سکتے ہیں لیکن ان سے شمالی کوریا کے فوجیوں اور اس کے عوام کو امید اور روشنی کا پیغام ملے گا
شمالی کوریا کچرے کے غبارے کیوں بھیج رہا ہے؟

میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا کہ شمالی کوریا نے مئی 2024 میں کچرے سے بھرے غبارے بھیجنے کا سلسلہ شروع کیا تھا۔

شمالی کورین ذرائع کے مطابق جنوبی کوریا کی جانب سے پروپیگنڈا مہم چلائی گئی تھی جس کے دوران انہوں نے شمالی کوریا کے خلاف پرچے اڑائے تھے اور اسی وجہ سے جوابی کارروائی کے طور پر غبارے بھیجے گئے۔

غزہ میں فلسطینیوں کے قتل عام پر کولمبیا نے اسرائیل کو کوئلے کی فراہمی معطل کر دی۔

عرب میڈیا کے مطابق کولمبیا کے صدر گسٹاوو پیٹرو نے ہفتے کے روز اعلان کیا کہ ان کی حکومت اسرائیل کو کوئلے کی فراہمی معطل کرنے جا رہی ہے۔

صدر پیٹرو نے کہا کہ “اسرائیل کو کوئلے کی فراہمی اس وقت تک معطل رہے گی جب تک غزہ میں قتل عام رک نہیں جاتا۔”

جنوبی کوریا کا شمالی کورین غباروں کا جواب لاؤڈ اسپیکر نشریات سے دینے کا فیصلہ
جنوبی کوریا کا شمالی کورین غباروں کا جواب لاؤڈ اسپیکر نشریات سے دینے کا فیصلہ

کولمبین حکام کا کہنا ہے کہ اسرائیل کو کوئلے کی فراہمی کی بندش چند دن میں باضابطہ طور پر شروع ہو جائے گی۔

امریکی خبر ایجنسی کی ایک رپورٹ کے مطابق اسرائیل نے گزشتہ سال کے ابتدائی 8 ماہ میں کولمبیا سے 320 ملین ڈالرز مالیت کا کوئلہ درآمد کیا۔

واضح رہے کہ اسرائیل اپنی ضرورت کے کوئلے کا 50 فیصد کولمبیا سے درآمد کرتا ہے۔

یاد رہے اس سے قبل کولمبیا کے صدر گسٹاوو پیٹرو نے غزہ میں اسرائیلی اقدامات پر اسرائیل سے سفارتی تعلقات ختم کرنے کا اعلان کیا تھا۔

کولمبیا کے صدر غزہ میں کارروائیوں پراسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو کے سخت ناقد رہے ہیں اور انہوں نے عالمی عدالت انصاف میں اسرائیل کے خلاف نسل کشی کیس میں فریق بننے کی بھی درخواست کی ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں